جانے والا چلاگیا کہ اسے تو جانا تھا

زندگی بے وفا کب تک ساتھ نبھانا تھا

چندلمحوں میں اک ساعت کا جینا گذرا

دنیااک پل بھرکی آخرت اک زمانہ تھا

اسکے نصیب میں تو یاد آنا لکھا تھا

اور ہمیں روز یاد کرکر کے بھلانا تھا

آج کی تو تقدیر میں برائ لکھی تھی

جو گزر گیا. وہی وقت بس سہانا تھا

بھولنے والےخوش نصیب و باوفا تھے

جس نے اسے یاد کیا وہی دیوانا تھا

Show your support

Clapping shows how much you appreciated Mohammad Waseem’s story.