• یہ تو ھوسکتا نہیں

سب اچھا ھو سکتا ھے پر یہ تو ھوسکتا نہیں تم میری ھوسکتی ھومیں تمھارا ھوسکتا نہیں

سمجھوتوھر برائ میں چھپی ھوتی ھےاچھائ تم اچھی ھو گئیں مگر میں اچھا ھوسکتانہیں

سمجھتی ھو پیارو شاعری کو کھیل بچپنے کا

تم تو ھوگئیں بڑی اور میں بڑا ھو سکتا نہیں

قید محبت میں عمر گذر گئ اب کوئ تمنانہیں

میں زندگی سےرہاپیار سے رہا ھو سکتا نہیں

یہ فاصلے یہ دوریاں ھر طرف غم سود و زیاں

جسدوجاں جدا میں تم سے جدا ھو سکتا نہیں

Show your support

Clapping shows how much you appreciated Mohammad Waseem’s story.